دُنیا کے 10 بڑے مذاہب اور اُن کا تعارف

کائنات کا خالق کون ہے اس بات پر دُنیا کے انسانوں میں کبھی اتفاق نہیں ہوا اس بنا پر دُنیا میں مختلف مذاہب پائے جاتے ہیں جو اپنے اپنے شعور کے مطابق کائنات کے خالق کا تعین کرتے ہیں اور اپنے اپنے انداز سے اُس کی عبادت کرتے ہیں .
اس آرٹیکل میں دُنیا میں موجود چند بڑے مذاہب اور دُنیا میں اُن کی تعداد کاکا ذکر کیا جائے گا ۔
عیسائیت:

آبادی کے لحاط سے یہ دُنیا کا سب سے بڑا مذہب ہے جس کے ماننے والوں کی تعداد 2.4 بلین کے لگ بھگ ہے یعنی دُنیا کی آبادی کا 33.4 فیصد حصہ کرسچئین ہے۔اس مذہب کے ماننے والے ایک خُدا پر یقین رکھتے ہیں اور کائنات کا خالق اُسی کو سمجھتے ہیں کرسچینز کا کہنا ہے کے عیسی خدا کے بیٹے ہیں اور اس عقیدے پر قائم ہیں کہ وہ دوبارہ دُنیا میں تشریف لائیں گے اور انسانیت کو بچائیں گے۔
 اسلام:
اسلام دُنیا کا دوسرا سب سے بڑا مذہب ہے جس کے ماننے والوں کی تعداد 1.8 بلین سے زیادہ ہے اور یہ دُنیا کی آبادی کا تقریباً 24.1 فیصد ہے۔اور اس میں گزرتےوقت کے ساتھاضافہ ہو رہا ہے۔ الحمدللہ۔۔۔ایک خُدا کے ماننے والے مُحمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کوخُدا کا آخری نبی مانتے ہیں اور قرآن مجید کو خُدا کا کلام اور خُدا کی طرف سے نازل کی گئی آخری کتاب مانتے ہیں۔
ہندوایزم:
بُت پرستی کرنے والے بہت سے خُداؤں کو کائنات کا خالق سمجھتے ہیں ان کی تعدا دُنیا میں 1.5 بلین کے لگ بھگ ہے جو دُنیا کی کل آبادی کا تقریباً 15 فیصد ہیں۔اس مذہب کی ابتدا 500 قبل مسیح سے بھی پُرانی ہے اور ہندو مت کے ماننے والے بہت سی کتابوں کو آسمانی کتابیں تصور کرتے ہیں ۔
 بُدھ ایزم:
مہاتما بُدھ کو خدا ماننے والے بُدھووں کی تعداد تقریباً 521 ملین ہے جو کُل دنیا کی آبادی کا تقریباً 5.5 فیصد ہے، اس مذہب کے ماننے والے مہاتما بُدھ کی تعلیمات پر عمل کرتے ہیں اور یہ دُنیا کا چوتھا بڑا مذہب ہے۔
 افریکن ٹرڈیشنل مذہ:
اس مذہب کے ماننے والوں کی تعداد تقریباً 100 ملین ہے اور یہ دوسرے بہت سے مذاہب کے ملاپ سے پیدا ہوا ہے جو ایمان رکھتا ہے روحوں پر ، جادو ٹونے پر، اور ادویات وغیرہ پر،اس مذہب کے پاس کوئی کتاب نہیں ہے اور اس مذہب کے ماننے والے دُنیا کی کل آبادی کا تقریباً 0.32 فیصد ہیں۔
 سکھ ایزم:
پندرویں صدی میں پنجاب میں پیدا ہونے والا یہ مذہب خُدا کی وحدانیت کا قائل ہے اور باباگُرو نانک کی تعلیمات پر عمل کرتا ہے جو کہ کتاب کی صورت میں ان کے پاس موجود ہے جسے گرو گرنتھ صاحب کہا جاتا ہے۔
اس مذہب کے ماننے والوں کی کل تعداد30 ملین سے زیادہ ہے اور یہ دُنیا کی آبادی کا تقریباً 0.21 فیصد ہے۔
:Spiritism
19ویں صدی میں جنم لینے والا یہ مذہب Spiritualistic Philosophy پر یقین رکھتا ہے جس کی تعلیمات فرانس کے رہنے والے Hippolyte Léon Denizard Rivail نے دیں۔ان کی دُنیا میں کل تعداد 30 ملین ہے اور یہ دُنیا کی آبادی کا تقریباً 0.21 فیصد ہیں
یہودی ایزم:
خُدا کی وحدانیت پر ایمان رکھنے والے اس مذہب کے ماننے والوں کی دُنیا میں کل تعداد 14.5 ملین ہے اور یہ دُنیا کی آبادی کا 0.20 فیصد ہیں۔
یہ حضرت عزیز کو خُدا کا بیٹا مانتے ہیں اور توراہ ان کی کتاب ہے جسے یہ آسمانی کتاب مانتےہیں۔
بہائی:
بہت سے مذاہب کی چیزوں کو ماننے والے اس مذہب کی بنیاد بہا اللہ نے ایران میں 1863 میں رکھی اور بعد میں نبوت کا دعوی بھی کیا، اس مذہب کے ماننے والوں کی دُنیا میں کل تعداد 7 ملین ہے اور یہ دُنیا کی آبادی کا تقریباً 0.10 فیصد ہے۔
جین ایزم:
جین ایزم یا جین دھرما کی ابتدا ہندوستان سے تقریباً 900بی سی ای میں ہوئی بہت سے خداؤں کو ماننے والے اس مذہب کے پیروکاروں کی کل تعداد تقریباً 4.2 ملین ہے اور یہ دُنیا کی آبادی کا تقریباً 0.06 فیصد ہیں

نوٹ: دُنیا کی ایک بڑی آبادی کسی بھی خُدا کو نہیں مانتی اور خُدا کو نا ماننے والے ان افراد کی تعداد 1.2 بلین ہے اور یہ دُنیا کی آبادی کا تقریباً 16 فیصد ہیں۔

بارش کے بعد ہوا ميں پانی کے تیرتے ہوئے ننھے ننھے کروی (گیند نما Spherical) قطروں پر جب سورج کی سفید روشنی پڑتی ہے تو سات رنگوں میں بکھر جاتی ہے جسے دھنک یا۔۔۔ مزید پڑھیں

آج ہم وٹامن ای کے ان حیران کن فوائد اوراستعمالات کے بارے میں بتائیں گے، جن کے بارے میں آپ نے کبھی بھی نہیں سناہوگا۔وٹامن ای کومختلف اشیاے کے ساتھ۔۔۔ مزید پڑھیں

ملک و ملت کا نام روشن کرنے والوں کا نام روشن رکھنا زندہ قوموں کا شیوہ رہا ہے۔ ہم بحیثیتِ پاکستانی اپنے فرزندِ ملت ڈاکٹر عبدالسلام کی کاوشوں کو سراہتے ہیں۔۔۔ مزید پڑھیں

کچھ کھانے ایسے ہیں جنہیں دوسرے کھانوں میں شامل کر کے کھایا جائے تو وہ ہمارے نظام انہظام پر اچھے اثرات مرتب نہیں کرتے اور بعض دفعہ ہمیں بیمار بھی کر دیتے ہیں۔۔۔ مزید پڑھیں

دنیا میں چند عمارات ایسی بھی ہیں جن کی تعمیر پر ایک شاہانہ بجٹ خرچ کیا گیا ہے جس کے ساتھ ہی انہیں دنیا کی مہنگی ترین عمارات ہونے کا اعزاز حاصل ہوچکا ہے۔۔۔ مزید پڑھیں

ایک دن نائی نے بادشاہ سے عرض کیا،حضور آپ وزیر کی جگہ مجھے وزیر کیوں نہیں بنا دیتے۔ بادشاہ نے مسکرا کر حجام کی طرف دیکھا اور اس سے کہا،ٹھیک ہے لیکن پہلے تم۔۔۔ مزید پڑھیں

یہ تاریخ کا پہلا واقعہ تھا کہ کسی ہندو کی چتا کو آگ نہ لگنے کی وجہ سے شمشان گھاٹ میں ہی دفنا دیا گیا ۔ایک ہندو احترام قران میں اس دنیا کی آگ سے محفوظ رہا ہم اس کتاب پر۔۔۔ مزید پڑھیں

یہ ایک مفلس غریب الوطن کے عزم و ہمت کی انوکھی داستان ہے جو ثابت کرتی ہے کہ آپ ڈٹے رہیں، محنت کرتے رہیں تو بالآخر کامیابی آپ کے قدم چومتی ہے۔۔۔ مزید پڑھیں

برہنہ حالت میں کبھی خود کو آئینے میں مت دیکھیں کیونکہ اس طرح جن آپ پر عاشق ہو سکتے ہیں اور آپ کے ساتھ تعلق کی کوشش کر سکتے ہیں۔ ایسی صورت میں اور کوئی بھی ۔۔۔ مزید پڑھیں

جوزف سوان اور تھامس ایڈیسن نے 1870 کی دہائی میں بجلی کا بلب بنایا۔ اس سے چند برس بعد ایڈیسن نے بجلی بنانے کے سٹیشن نیویارک میں پرل سٹریٹ اور لندن میں ۔۔۔ مزید پڑھیں

انسان نے سونا 8,000 سال قبل دریافت کر لیا تھا۔ 750 سال قبل از مسیح تک یعنی سونے کی دریافت کے سوا پانچ ہزار سال بعد تک انسان صرف سات دھاتوں سے واقف تھا ۔۔۔ مزید پڑھیں

سورہ کہف کی تلاوت فتنے دجال سے نجات کا باعث ہے ۔ خروج دجال قیامت کی بڑی نشانیوں میں سے ایک ہے اور فتنہ دجال زمانے کے شروفتن میں سب سے بڑا فتنہ ہے مکہ مکرمہ۔۔۔ مزید پڑھیں