مردوں اور عورتوں کی غُسل کے مسائل اور طریقہ

ان باتوں کو لکھتے ہوئے پریشانی ہے مگر اکثر نوجوان اُلٹے سیدھے سوال کرتے ہیں اور کچھ بات کرتے ہوئے شرماتے ہیں۔ آسان اردو میں یہ سمجھ لیں کہ ’’روح‘‘ جائز اور ناجائز کاموں سے پلید ہو جاتی ہے تو اس کو پاک کرنے کے لئے غسل کیا جاتا ہے، روح کے پلید ہونے کی صورتیں یہ ہیں:
1۔ رات کو نیند کی حالت میں پیشاب والے سوراخ سے گاڑھاپانی (منی) نکل آئے اور کپڑوں پر نجاست کے نشان نظر آئیں جسے ’’احتلام‘‘ کہتے ہیں۔
2 ۔ اپنے ہاتھ(مشت زنی، ہتھ رسی، ایک ہاتھ سے نکاح، کھلونا) یا اس طرح کے کسی بھی انداز سے جب اپنی ’’شرم گاہ‘‘ سے کھیلنے پر گاڑھا پانی لذت کے ساتھ کود کر (منی) نکل آئے۔
لاکھوں اس بد عادت میں مبتلا ہیں مگر اس سے چُھٹکارا پانا ’’نکاح‘‘ کرنے کے سوا ممکن نہیں۔ البتہ ہر’’نوجوان‘‘ کو ایمانی حوصلہ دینے کے لئے مشورہ ہے کہ اگر یہ ’’گناہ‘‘ نہ چُھوٹے توکوشش کرے کہ ’’نماز‘‘ بھی ہر گز نہ چُھوٹے کیونکہ نماز کا چھوڑ دینا ہر گناہ سے بھی بڑھ کر گناہ ہے۔
3 ۔ لڑکا لڑکے کے ساتھ یا لڑکی لڑکی کے ساتھ گناہ کرے، مرد عورت کے پچھلے سوراخ کو استعمال کرے، عورت اور مرد کا ایک دوسرے کی شرم گاہ کو چومنا چاٹنا، جس سے نجاست گندگی منہ کو لگ جائے تو منہ ’’پلید‘‘ ہو جاتا ہے، یہ جانوروں کی طرح جنسی تسکین کی بدترین (حرام) صورتیں ہیں اور روح کو ناپاک کر دیتی ہیں۔اس وقت کے نوجوان کا امتحان یہی باتیں ہیں۔
4 ۔ میاں بیوی اپنی جسمانی و نفسانی خواہش کو پورا کرنے کے لئے صحبت کریں گے تو ایک دوسرے میں گُم ہوتے ہی غسل کرنا پڑے گا چاہے ابھی انزال یا اختتام کو نہ پہنچے ہوں اور یہ عمل غیر شادی شدہ بھی کریں گے توان کے لئے یہ عمل حرام(زنا) ہے لیکن ’’ غسل ‘‘ان کو بھی کرنا پڑے گا۔
فارمولہ: غسل کے لئے شرط یہی ہے کہ جب پانی(منی) اُچھل کر جھٹکے سے باہر نکل کر بندے کا نفسانی شوق پورا کردے تو اس پر’’غسل ‘‘کرنا پڑتا ہے اوراگر گندہ خیال آنے پر شہوت بڑھ جائے یا عورت کو چھونے سے لیسدار پانی (مذی) شرم گاہ سے نکلا تونماز کے لئے ’’وضو‘‘ کرنا پڑتا ہے۔
حالت : سونے کے دوران محسوس ہوا کہ احتلام ہو گیا ہے مگر جب بیدار ہوا تو کپڑے پر نشان نہیں تھے تو غسل نہیں کرتے اور اگر خواب بھی نہیں دیکھا لیکن صبح کپڑوں پر نشان تھے تو غسل کرنا پڑے گا۔
بیماری: عورت کو لیکوریا اور مرد کو جریان جیسی بیماری کی وجہ سے’’غسل‘‘ نہیں ’’وضو‘‘ کرنا ہوتا ہے۔
عورت کے لئے غسل کی دو صورتیں یہ بھی ہیں:
1۔ خون حیض ماہواری یا Menses
یہ خون عورت کی شرم گاہ سے آتا ہے جس کے پہلی بار آتے ہی عورت بالغ ہو جاتی ہے۔حیض تین دن رات سے کم اور دس رات دن سے زیادہ نہیں ہوتا۔ اس مدت سے کم یا زیادہ ہو تو اس کو’’ استحاضہ‘‘ کہیں گے۔
بیماری: استحاضہ میں عورت کی شرم گاہ کے اندر کی کوئی رگ زخمی ہو جاتی ہے جس سے خون آتا ہے۔
علامت: استحاضہ کے خون میں بدبو نہیں ہوتی اور حیض کے خون میں بدبو ہوتی ہے۔استحاضہ والی عورت سے مردصحبت کر سکتا ہے اورعورت نماز بھی پڑھے گی مگر ہر نماز کے لئے ’’وضو‘‘ نیا کرے گی۔
دو حیض: عورت کو ایک ماہ میں دو حیض بھی آ سکتے ہیں۔ حیض کے دوران نمازیں پڑھنا گناہ ہے اور بعد میں بھی ان نمازوں کی معافی ہے البتہ حیض میں چُھوٹے رمضان کے روزے بعد میں رکھنے پڑتے ہیں۔
حساب: ایک عورت کو دو دن خون آیا پھر بند ہو گیا، پھر چھٹے دن خون آیا اور بیچ کے تین دن پاک رہی لیکن نمازیں پڑھتی رہی تو ایسی عورت کا یہ عرصہ حیض کا تھا اور نمازیں پڑھنے پر گناہ گار نہیں ہو گی۔
اسی طرح حیض نہیں تھالیکن دو دن خون آنے سے نمازیں نہیں پڑھیں تو ان نمازوں کی قضا کرنی پڑے گی کیونکہ کچھ عورتوں کے مخصوص دن بدل بھی جاتے ہیں اور ان کو اپنے مزاج اور عادت کے مطابق ’’حیض ‘‘اور ’’استحاضہ‘‘ میں فرق کرنے کے علاوہ اپنی نمازوں اور روزوں کا حساب بھی رکھنا ہو گا۔
2۔ نفاس (بچہ پیدا ہونے پر خون)
مدت: اسی طرح عورت کو بچہ پیدا ہونے پر اس کی شرم گاہ سے خون آنا شروع ہو جاتا ہے جس کو نفاس کا خون کہتے ہیں ۔ یہ خون پانچ منٹ میں بھی بند ہو سکتا ہے اور زیادہ سے زیادہ مدت40دن تک ہوتی ہے، 40دن کے بعد اس خون کونفاس کا نہیں بلکہ’’ استحاضہ‘‘ کہتے ہیں۔ 40دن کے بعد یا جس وقت خون بند ہو جائے، اسی وقت سے عورت غسل کر کے نماز، روزہ کرے اور مرد سے صحبت ’’جائز‘‘ ہے۔
حل: جس مرد یا عورت کا مسلسل خون (بواسیر، نکسیر، استحاضہ)، مسلسل پھنسی پھوڑے سے پیپ، مسلسل پیشاب، مسلسل ہوا گیس وغیرہ ، 2رکعت یا 4رکعت’’ نماز‘‘پڑھتے وقت بھی نہ رُکے تواس کو ’’معذور‘‘کہتے ہیں اور جب تک یہ’’ معذوری‘‘ہے اگر ظہر کے وقت وضو کیاتو عصر تک وضو رہے گا اور عصر کا وضو کیا تو مغرب تک رہے گا۔
اسی ایک وضو سے فرض نماز، قضا نماز، نفل، قرآن کی تلاوت، سجدہ تلاوت کرتا رہے البتہ ’’معذوری‘‘ کی وجہ سے نہیں بلکہ وضو توڑنے والی کوئی اور صورت (پیشاب، پاخانہ،قے، اُلٹی،مذی، نماز میں ہنسنا،خون کا نکل آنا، ہوا کا نکل جانا وغیرہ)ہو تو دوبارہ وضو کریں۔یہ بھی یاد رہے کہ معذور مسلمان کو امام نہیں بنانا چاہئے اور امام کو اس طرح کی بیماری میں امام بننا نہیں چاہئے کیونکہ بیماری کا علم امام کو ہو گا عوام کو نہیں۔
آسانی: اسی معذوری میں نماز کے لئے ’’ پاک‘‘ کپڑا پہنا لیکن نماز سے فارغ ہونے سے پہلے وہ کپڑا بھی ’’ناپاک‘‘ ہوگیا تو اس کو بغیر دھوئے نماز پڑھ سکتے ہیں۔
ممانعت: جس پر غسل ضروری ہو، اس کیلئے قرآن پاک کو پکڑنا، پڑھنا اور چھونا منع ہے۔ اگر قرآن پاک پکڑنا پڑے تو پاک کپڑے سے پکڑ کر ادھر ادھر رکھ سکتے ہیں۔ مسجد میں جانا منع ہے لیکن کسی مدرسے یا مرکز میں جا سکتے ہیں۔حائضہ اور نفاس والی عورت اگر ٹیچر بھی ہو توکسی کو قرآن پاک نہ پڑھائے اور بہت ضروری ہو تو ناظرہ پڑھاتے ہوئے قرآن کا ایک ایک لفظ الگ الگ کر کے طالبات کو سمجھا سکتی ہے۔
وقت: بہتر یہی ہے کہ جنابت کاغسل جلد کر لیا جائے لیکن اگرعشاء کے بعد غسل کی حاجت ہوئی تو نماز فجر سے پہلے تک ناپاک رہے تو کوئی بات نہیں لیکن اگرنماز فجر قضا ہوگئی تو سخت گناہ گار ہیں۔
مشورہ: حیض یا نفاس والی عورت نماز کے پانچ وقت ’’مصلے‘‘ پر بیٹھ کر درود، کلمہ، استغفار، دعائیں پڑھے کیونکہ مصلے پر بیٹھنا منع نہیں اور نہ ہی تسبیح پکڑنا اور پڑھنا منع ہے ۔ قرآن پاک پڑھنا منع ہے البتہ رات کو سونے سے پہلے آیت الکرسی، الحمد شریف وغیرہ ’’قرآن‘‘سمجھ کر نہیں بلکہ دُعا کی نیت سے پڑھی جا سکتی ہیں۔
اجازت: حیض اور نفاس والی عورت کھانا پکا سکتی ہے، بچے کو دودھ پلا سکتی ہے، صاف ستھرا رہنے کے لئے نہا بھی سکتی ہے، میاں بیوی آپس میں دل لگی کر سکتے ہیں لیکن صحبت نہیں کر سکتے اور اگرکوئی اپنی بیوی سے حیض میں صحبت کر لے تو غریب آدمی’’ توبہ‘‘ کرے اور امیر آدمی کچھ ’’صدقہ‘‘ بھی کرے۔
غسل سنت: ہر فضیلت والے دن اور رات میں غسل کرنا بہترہے اورنبی اکرمﷺ نے جمعہ یاعیدین کی نماز کیلئے غسل کرنے کا فرمایا ہے۔ غسل کرنے کے بعد نبی کریمﷺ وضو نہیں کرتے تھے۔
غسل کا عوام کے لئے آسان طریقہ؟
جب بھی نہائیں یہ 3فرض پورے کر لیں۔( 1) منہ بھر کرکلی (غرغرہ کرنا) (2) ناک کی ہڈی تک پانی ڈال کرجمی ہوئی مٹی صاف کرنا (3) سارے بدن کو مل مل کر ایسے دھونا کہ کوئی بال بھی خشک نہ رہے۔ روزے کی حالت میں صرف تیسرا(3) فرض ادا کرنا ہے لیکن غرغرہ اور ناک میں اندر تک پانی نہیں ڈالنا۔
بہتر: غسل کرنے سے پہلے دونوں ہاتھ دھو کر جسم پر لگی’’گندگی‘‘صاف کر کے فرش پر پانی بہا دیں ، اس کے بعد اگر جسم اور فرش پرسے چھینٹے اُڑ کر بالٹی میں بھی پڑ جائیں تو پانی ناپاک نہیں ہو گا۔وضو کریں، 2 فرض غرغرہ اور ناک میں پانی اچھے طرح ڈالیں اور سر سے لے کر پاؤں تک سارے جسم پر پانی بہا ئیں۔
اہم : سارے جسم کو دھونا ضروری ہے ، اس لئے ناک میں جمی مٹی اور ہاتھوں میں لگا ہوا آٹا، ناک کان کی بالیاں اور نیل پالش وغیرہ اتار کر ’’غسل‘‘ کریں البتہ جو رنگ یاقلعی کا کام کرتا ہے اور رنگ ہاتھوں وغیرہ پر اسطرح جَم گیا ہو کہ اتارنے پر زخم بن جائے گاتو معافی ہے ۔ایسی اشیاء جیسے مہندی یا تیل بالوں اور جسم پرلگا ہولیکن پانی اس کے باوجود جسم اور بالوں کی جڑوں تک پہنچ جاتاہے،اس سے غسل ہو جاتا ہے۔
* عورتوں کی چوٹی گندھی ہوئی ہو تو کھولنے کی ضرورت نہیں بلکہ بالوں کی جڑوں میں پانی پہنچائے۔ اگر بال کُھلے ہوئے ہوں یا گُیسو چوٹی سے علیحدہ گندھے ہوئے ہوں تو ان کو کھول کر غسل کرے۔
جزاک اللہ۔۔۔
بارش کے بعد ہوا ميں پانی کے تیرتے ہوئے ننھے ننھے کروی (گیند نما Spherical) قطروں پر جب سورج کی سفید روشنی پڑتی ہے تو سات رنگوں میں بکھر جاتی ہے جسے دھنک یا۔۔۔ مزید پڑھیں

آج ہم وٹامن ای کے ان حیران کن فوائد اوراستعمالات کے بارے میں بتائیں گے، جن کے بارے میں آپ نے کبھی بھی نہیں سناہوگا۔وٹامن ای کومختلف اشیاے کے ساتھ۔۔۔ مزید پڑھیں

ملک و ملت کا نام روشن کرنے والوں کا نام روشن رکھنا زندہ قوموں کا شیوہ رہا ہے۔ ہم بحیثیتِ پاکستانی اپنے فرزندِ ملت ڈاکٹر عبدالسلام کی کاوشوں کو سراہتے ہیں۔۔۔ مزید پڑھیں

کچھ کھانے ایسے ہیں جنہیں دوسرے کھانوں میں شامل کر کے کھایا جائے تو وہ ہمارے نظام انہظام پر اچھے اثرات مرتب نہیں کرتے اور بعض دفعہ ہمیں بیمار بھی کر دیتے ہیں۔۔۔ مزید پڑھیں

دنیا میں چند عمارات ایسی بھی ہیں جن کی تعمیر پر ایک شاہانہ بجٹ خرچ کیا گیا ہے جس کے ساتھ ہی انہیں دنیا کی مہنگی ترین عمارات ہونے کا اعزاز حاصل ہوچکا ہے۔۔۔ مزید پڑھیں

ایک دن نائی نے بادشاہ سے عرض کیا،حضور آپ وزیر کی جگہ مجھے وزیر کیوں نہیں بنا دیتے۔ بادشاہ نے مسکرا کر حجام کی طرف دیکھا اور اس سے کہا،ٹھیک ہے لیکن پہلے تم۔۔۔ مزید پڑھیں

یہ تاریخ کا پہلا واقعہ تھا کہ کسی ہندو کی چتا کو آگ نہ لگنے کی وجہ سے شمشان گھاٹ میں ہی دفنا دیا گیا ۔ایک ہندو احترام قران میں اس دنیا کی آگ سے محفوظ رہا ہم اس کتاب پر۔۔۔ مزید پڑھیں

یہ ایک مفلس غریب الوطن کے عزم و ہمت کی انوکھی داستان ہے جو ثابت کرتی ہے کہ آپ ڈٹے رہیں، محنت کرتے رہیں تو بالآخر کامیابی آپ کے قدم چومتی ہے۔۔۔ مزید پڑھیں

برہنہ حالت میں کبھی خود کو آئینے میں مت دیکھیں کیونکہ اس طرح جن آپ پر عاشق ہو سکتے ہیں اور آپ کے ساتھ تعلق کی کوشش کر سکتے ہیں۔ ایسی صورت میں اور کوئی بھی ۔۔۔ مزید پڑھیں

جوزف سوان اور تھامس ایڈیسن نے 1870 کی دہائی میں بجلی کا بلب بنایا۔ اس سے چند برس بعد ایڈیسن نے بجلی بنانے کے سٹیشن نیویارک میں پرل سٹریٹ اور لندن میں ۔۔۔ مزید پڑھیں

انسان نے سونا 8,000 سال قبل دریافت کر لیا تھا۔ 750 سال قبل از مسیح تک یعنی سونے کی دریافت کے سوا پانچ ہزار سال بعد تک انسان صرف سات دھاتوں سے واقف تھا ۔۔۔ مزید پڑھیں

سورہ کہف کی تلاوت فتنے دجال سے نجات کا باعث ہے ۔ خروج دجال قیامت کی بڑی نشانیوں میں سے ایک ہے اور فتنہ دجال زمانے کے شروفتن میں سب سے بڑا فتنہ ہے مکہ مکرمہ۔۔۔ مزید پڑھیں