چھپکلیاں،کیڑے مکوڑے بھگانے کا آسان طریقہ

کیڑے مکوڑے اور چھپکلیاں جہاں کراہت پیدا کرتے ہیں وہاں گھر کی خوبصورتی کو بھی نقصان پہنچاتے ہیں اور ان کو مارنے والے زہریلے سپرے گھر میں موجود ہمارے چھوٹے بچوں سمیت ہمارے لیے بھی نقصان دہ ہوتے ہیں اور ماحول دوست نہیں ہوتے۔
آج ہم آپ کوایسےطریقےبتائیں گے جو جہاں آپکی اور آپکے بچوں کی صحت کے لیے نقصان دہ نہیں ہیں وہاں حشرات کو آپ کے گھر سے دُور رہنے پر مجبور کر دیں گے۔
انڈوں کےخول:
انڈوں کے گولے گھر میں مختلف جگہوں پر(داخلی راستوں) انڈوں کے کچھ خول ڈالیں ، بس ان خولوں کو توڑنا نہیں ہے ۔، اسے دو ٹکڑوں میں کاٹنا ہوگا اور یہ ہر جگہ کے لئے کافی ہوگا ، لیکن ہر چھ سے چار ہفتوں میں ان چھلکوں کو تبدیل کرنا ضروری ہے۔ گھر سے چھپکلیوں کو خوفزدہ کرنے کا یہ ایک بہت ہی موثر اور سستا طریقہ ہے۔
پودینے کا تیل:
پودینے کا تیل اور اس کی خوشبو حشرات کو انتہائی نا پسند ہے مگر یہ تیل کُچھ لوگوں میں جلد پر جلن پیدا کرتا ہے لہذا اس کو سپرے کرنے سے پہلے اس میں پانی شامل کر لیں اور اسے گھر کی اُن جگہوں پر سپرے کریں جہاں حشرات موجود ہوں خاص طور پر گھر کی کھڑکیوں روشن دانوں اور دروازوں کے اردگرد اس سپرے کو چھڑکیں تاکہ گھر کے اندر حشرات داخل نہ ہوں۔
کافور کی گولیاں:
کافورکی گولیوں کو بھی آپ اس کام کے لیئے استعمال کرسکتے ہیں ، چیونٹی ، مکھی اور چھپکلی کو بھگانے کے لیئے آپ ان گولیوں کو چولہے ، فرج یا سنک کے نیچے رکھ کر چھپکلیوں سے نجات حاصل کرسکتے ہیں۔ حشرات کو بھگانے والا سپرے خود بنائیں
حشرات اور چھپکلیوں کو بھگانے کے لیے سیب کا سرکہ کوئی بھی کوکنگ آئل، سُرخ مرچ اور برتن دھونے والا لیکوڈ سوپ (لیموں کی خشبو والا بہترین ہوگا) پانی میں اچھی طرح حل کر کے گھر میں روزانہ سپرے کریں خاص طور پر گھر کے داخلی راستوں اور دروازے کھڑکیوں پر یہ سپرے روزانہ کریں۔
گھر کے اندر اور باہر صفائی کی رکھیں:
کیڑے مکوڑے مچھر وغیرہ عام طور پر وہیں ڈیرے ڈالتے ہیں جہاں گندگی ہو اور چھکلیاں بھی وہیں پروان چڑھتی ہیں جہاں اُسے کھانے کے لیے وافر مقدار میں کیڑے مکوڑے ملیں لہذا اپنے گھر کے اندر اور باہر صفائی رکھیں اور گھر کے فرش کو ہفتے میں کم از کم 3 سے 4 دفعہ فنائل سے صاف کریں۔
گھر میں بلی رکھ لیں:
بلی پالتو جانوروں میں شمار ہوتی ہے جو گھر کے بچے کُچھے کھانے پر گُزارا کر لیتی ہے اور گھر کے بچوں کیساتھ کھیلتی بھی ہے۔ بلی حشرات کی دُشمن ہے اور اُن کا پیچھا کر کے اُنہیں ٹھکانے لگا دیتی ہے اورحشرات کے ساتھ ساتھ چھکلیاں کھا جاتی ہے اور چوہوں کی آتما کی شانتی کے لیے بھی تن تنہا کام کرتی رہتی ہے ۔
کینو مالٹے اور لیموں کے چھلکے:
تازہ سٹرس فروٹس کے چھلکے کی خُشبو حشرات کو انتہائی ناگوار گُزرتی ہے لہذا اپنے گھر کے اردگرد اس کے چھلکے رکھ دیں خاص طور پر گھر کے داخلی راستوں میں روشن دانوں اور کھڑکیوں کے پیچھے تاکہ حشرات ایسے مقامات پر اپنا بسیرا ختم کریں اور دُور بھاگیں۔
لیڈی بگ یعنی سُرخ بھنورا:
گھر کے باہر اور گھر کے صحن میں پودے لگائیں اور لیڈی بگ کو اُن پودوں پر جگہ دیں، لیڈی بگ اگرچہ خود حشرات میں شُمار ہوتی ہے مگر جہاں یہ ہو وہاں دُوسرے حشرات نہیں آتے اسکے ساتھ ساتھ یہ اپنے ماحول کے اردگرد حشرات کا سارا کھانا کھا جاتی ہے چنانچہ حشرات جہاں یہ موجود ہو وہاں فاقے کی حالت میں زیادہ عرصہ گُزارا نہیں کر پاتے اور جہاں حشرات نہ ہوں وہاں چھکلی بھی نہیں رہتی۔
شاہ بلوط یعنی چیسٹ نٹ:
شاہ بلوط حیرت انگیز طور پر حشرات کو ناپسند ہیں اور ان کی خوشبو اُنہیں دُور سے ہی دُور رکھتی ہے اس لیے آپ ان کا استعمال حشرات کو بھگانے کے لیے کر سکتے ہیں اور ذہانت سے انہیں گھر کے ایسے حصوں میں رکھیں جہاں سے حشرات گھر میں داخل ہوتے ہیں یعنی دروازے کھڑکیاں اور روشن دان وغیرہ۔
پودینے کے پتے اور کالی مرچ:
پودینے کے پتے اور کالی مرچ کے پاوڈر کو کسی ملک شیک کرنے والے جگ میں ڈال کر اچھی طرح شیک کر کے بوتل میں ڈال کر گھر میں روزانہ سپرے کریں خاص طور پر پردوں کے پیچھے اور دروازے کھڑکیوں پر حشرات بھاگ جائیں گے اور اس سپرے کو وہاں بھی چھڑکیں جہاں چھکلیوں کا بسیرا ہو۔
دیودار کی لکڑی:
دیودار کی لکڑی کی خُوشبو بھی حشرات کو انتہائی ناپسند ہے اور اگر اس لکڑی کا بُورہ گھر میں حشرات کی موجودگی والے مقامات پر رکھ دیا جائے اور گھر کے داخلی راستوں کے قریب اسے پھیلا دیا جائے تو یہ حشرات کو گھر سے دُور رہنے پر مجبور کر دیتا ہے۔
اینٹی حشرات پینٹ:
مچھروں کو مارنے والا پینٹ ملیریا اور ڈینگی کے خلاف ایک انتہائی زبردست ایجاد ہے مگر یہ ابھی پاکستان میں عام دستیاب نہیں ہے اور مہنگا بھی ہے مگر اگر ایک بار گھر کو اس پینٹ سے پینٹ کر لیا جائے تو پھر سکون ہی سکون ہے۔

بارش کے بعد ہوا ميں پانی کے تیرتے ہوئے ننھے ننھے کروی (گیند نما Spherical) قطروں پر جب سورج کی سفید روشنی پڑتی ہے تو سات رنگوں میں بکھر جاتی ہے جسے دھنک یا۔۔۔ مزید پڑھیں

آج ہم وٹامن ای کے ان حیران کن فوائد اوراستعمالات کے بارے میں بتائیں گے، جن کے بارے میں آپ نے کبھی بھی نہیں سناہوگا۔وٹامن ای کومختلف اشیاے کے ساتھ۔۔۔ مزید پڑھیں

ملک و ملت کا نام روشن کرنے والوں کا نام روشن رکھنا زندہ قوموں کا شیوہ رہا ہے۔ ہم بحیثیتِ پاکستانی اپنے فرزندِ ملت ڈاکٹر عبدالسلام کی کاوشوں کو سراہتے ہیں۔۔۔ مزید پڑھیں

کچھ کھانے ایسے ہیں جنہیں دوسرے کھانوں میں شامل کر کے کھایا جائے تو وہ ہمارے نظام انہظام پر اچھے اثرات مرتب نہیں کرتے اور بعض دفعہ ہمیں بیمار بھی کر دیتے ہیں۔۔۔ مزید پڑھیں

دنیا میں چند عمارات ایسی بھی ہیں جن کی تعمیر پر ایک شاہانہ بجٹ خرچ کیا گیا ہے جس کے ساتھ ہی انہیں دنیا کی مہنگی ترین عمارات ہونے کا اعزاز حاصل ہوچکا ہے۔۔۔ مزید پڑھیں

ایک دن نائی نے بادشاہ سے عرض کیا،حضور آپ وزیر کی جگہ مجھے وزیر کیوں نہیں بنا دیتے۔ بادشاہ نے مسکرا کر حجام کی طرف دیکھا اور اس سے کہا،ٹھیک ہے لیکن پہلے تم۔۔۔ مزید پڑھیں

یہ تاریخ کا پہلا واقعہ تھا کہ کسی ہندو کی چتا کو آگ نہ لگنے کی وجہ سے شمشان گھاٹ میں ہی دفنا دیا گیا ۔ایک ہندو احترام قران میں اس دنیا کی آگ سے محفوظ رہا ہم اس کتاب پر۔۔۔ مزید پڑھیں

یہ ایک مفلس غریب الوطن کے عزم و ہمت کی انوکھی داستان ہے جو ثابت کرتی ہے کہ آپ ڈٹے رہیں، محنت کرتے رہیں تو بالآخر کامیابی آپ کے قدم چومتی ہے۔۔۔ مزید پڑھیں

برہنہ حالت میں کبھی خود کو آئینے میں مت دیکھیں کیونکہ اس طرح جن آپ پر عاشق ہو سکتے ہیں اور آپ کے ساتھ تعلق کی کوشش کر سکتے ہیں۔ ایسی صورت میں اور کوئی بھی ۔۔۔ مزید پڑھیں

جوزف سوان اور تھامس ایڈیسن نے 1870 کی دہائی میں بجلی کا بلب بنایا۔ اس سے چند برس بعد ایڈیسن نے بجلی بنانے کے سٹیشن نیویارک میں پرل سٹریٹ اور لندن میں ۔۔۔ مزید پڑھیں

انسان نے سونا 8,000 سال قبل دریافت کر لیا تھا۔ 750 سال قبل از مسیح تک یعنی سونے کی دریافت کے سوا پانچ ہزار سال بعد تک انسان صرف سات دھاتوں سے واقف تھا ۔۔۔ مزید پڑھیں

سورہ کہف کی تلاوت فتنے دجال سے نجات کا باعث ہے ۔ خروج دجال قیامت کی بڑی نشانیوں میں سے ایک ہے اور فتنہ دجال زمانے کے شروفتن میں سب سے بڑا فتنہ ہے مکہ مکرمہ۔۔۔ مزید پڑھیں