ایلوویرا: استعمال کرنے کے فائدے اور نقصانات

ایلوویرا /کوار گندل  ہمیشہ سر سبز رہنے والا رس بھرا پودا ہے اور عام طور پر گرم مطوب کم ٹھنڈے اور بنجر علاقوں میں پھلتا پُھولتا ہےاور اسے زرعی اور ادویاتی مقاصد اور خوبصورتی کے لیے کاشت کیا جاتا ہے اور یہ گملوں میں بھی آسانی سے پھلتا پھولتا رہتا ہے۔کوار گندل کا استعمال بہت سی پراڈکٹس میں ہوتا ہے جس میں مشروبات، جلد کو خوبصورت بنانے والے لوشنز، کاسمیٹیکس، اور معمولی زخموں کو بھرنے والے مرہم وغیرہ شامل ہیں۔
اس آرٹیکل میں ہم ایلوویرا کی خصوصیات کا ذکر کریں گے تاکہ آپ بھی اس کے فوائد کو جان کر اس سے مستفید ہو سکیں اور اس پودے کے صحت پر نقصانات کا ذکر بھی کریں گے۔
1۔ صحت کے لیے مُفید کیمیا سے بھر پُور :
ایلو ویرا کے پتے سبز موٹے اور اپنے اندر پانی کو ذخیرہ کیے ہوتے ہیں اور یہ پانی ایک جل کی شکل میں ان پتوں کے اندر موجود ہوتا ہے اور یہ جل اپنے اندر کئی وٹامنز منرلز، ایمائنوایسڈز اور اینٹی آکسائیڈینٹ خُوبیاں رکھتی ہے اور انہیں خُوبیوں کی وجہ سے یہ پودا فارماسوٹیکل، کاسمیٹیکس اور کھانوں وغیرہ میں استعمال کیا جاتا ہے اور اسکی سالانہ تقریباً 13 بلین ڈالر کی مارکیٹ ہے۔
2۔اینٹی آکسائیڈینٹ اور اینٹی بیکٹریل :
کوار گندل میں ایک خاص قسم کا کمپاونڈ جسے پولی فینلز کہتے ہیں پایا جاتا ہے اور اس کمپاونڈ میں اینٹی آکسائیڈینٹ اور اینٹی بیکٹریل خوبیاں موجود ہوتی ہیں جو ہماری صحت کے لیے مُفید ہیں اور بہت سی بیماریوں کے خلاف بطور دوا استعمال کی جاسکتی ہیں۔
3۔ زخم جلد ٹھیک :
چھوٹے موٹے زخموں کو جلنے کے زخموں کو اور خاص طور پر سن برن کی صُورت میں اس پودے کو زخموں پر ملنے سے زخم بھرنے کا عمل تیز ہو سکتا ہے اور اسے اس مقصد کے لیے صدیوں سے استعمال کیا جارہا ہے اور کیونکہ اس کے اندر اینٹی بیکٹریل خُوبیاں شامل ہیں اس لیے یہ زخموں کو خراب ہونے سے بھی بچاتا ہے۔
4۔دانتوں کی صحت کے لیے مُفید :
دانتوں کو کیڑا لگنا اور مسوڑھوں کا خراب ہونا عام بیماریاں ہیں جو کہ مُنہ کے اندر پیدا ہونے والے جراثیموں کی وجہ سے لاحق ہوتی ہیں، میڈیکل سائنس کی ایک تحقیق کے نتائج کے مُطابق ایلوویرا کا رس کسی بھی عام ماوتھ واش کی خوبیاں رکھتا ہے اور مُنہ سے جراثیموں کا خاتمہ کردیتا ہے جس سے دانتوں کو کیڑا نہیں لگتا اور مسوڑھے بھی تندرست رہتے ہیں۔
5۔منہ کے چھالوں اور ہونٹوں کے زخموں میں مفید :
منہ کے چھالے یعنی السر جو کے ہونٹوں پر زخموں کی صورت میں بھی ظاہر ہوتے ہیں کئی لوگوں کو متاثر کرتے ہیں اور ان کے پیدا ہونے کی کئی وجوہات ہیں اور جب یہ ظاہر ہوتے ہیں تو 7 سے 10 دن ہمیں تکلیف میں مُبتلا رکھتے ہیں۔سائنس کی تحقیق کے نتائج کے مُطابق ایلوویرا کے اندر موجود جل جہاں ان زخموں کو جلد ٹھیک کرنے میں کارآمد ہے وہاں ان زخموں سے پیدا ہونے والی تکلیف میں بھی راحت کا باعث بنتی ہے۔
6۔قبض کی شکایت :
ایلوویرا صدیوں سے قبض ختم کرنے کے لیےبطور دوا استعمال ہوتا ہے اور اس مقصد کے لیے اس کی جل کی بجائے اس پودے کے چھلکے کے نیچے موجود لیٹکس استعمال کی جاتی ہے جس میں دافع قبض خوبیاں شامل ہیں۔
7۔جلد کو بہتر اور جھریاں ختم :
کوار گندل جلد کے لیے ایک انتہائی مُفید پودا ہے اور اس کی جل جھریاں ختم کر کے عُمر کے بڑھنے کے اثرات کو ظاہر ہونے سے روکنے کے ساتھ کیل مہاسوں وغیرہ کو ختم کرنے میں انتہائی معاؤن ہے۔ایک تحقیق کے مُطابق اس پودے کی جل جلد کے لیے مُفید پروٹین کلوجن کی پیداوار میں اضافے کے باعث بنتی ہے اوراسے مسلسل تین مہینے کے استعمال سے جلد کے لیے خاطر خواہ فائدے حاصل کیے جاسکتے ہیں۔
8۔ بلڈ شوگر اور ایلوویراطب:
ایوردیک اور طب یونان میں اسے ذیابطیس کے مرض کو کنٹرول کرنے کے لیے کُچھ ادویات میں استعمال کیا جاتا ہے اور میڈیکل سائنس کی بھی چند تحقیقات کے مُطابق یہ ٹائپ 2 کی ذیابطیس میں مُفید ثابت ہو سکتا ہے مگر میڈیکل سائنس کے پاس ابھی اس بات کو ثابت کرنے کے لیے اتنے ٹھوس ثبوت نہیں ہیں اور یہ بات مشاہدے میں آئی ہے کہ ایلوویرا کے زیادہ سپلیمینٹ کھانےوالے افراد میں جگر کی خرابی پیدا ہوئی ہے۔
ایلو ویرا کے نقصانات :
یہ پودا عام طور پر نقصان دہ نہیں ہے اور جلد پر لگانے اور کھانے کے لیے مُفید ہے مگر کُچھ لوگوں میں اس کا استعمال کرنے سے جلد پر الرجی ہو سکتی ہے اس لیے ایسے افراد اسے استعمال نہ کریں اور ایسے افراد بھی جنہیں لہسن اور پیاز سے الرجی ہوتی ہے اسے استعمال نہ کریں اور خاص طور پر ایسے افراد جو کوئی سرجری کروانا چاہتے ہیں دو ہفتے پہلے اسے استعمال کر بند کر دیں۔
حاملہ خواتین اوردُودھ پلانے والی خواتین کیساتھ 12 سال سے کم عُمر کے بچے اس پودے کو کھانے کے لیے استعمال نہ کریں یہ اُن کے لیے مُفید نہیں ہوگا۔اس پودے کو استعمال کرتے وقت احتیاط رکھیں اور اگر یہ جسم پر کوئی غلط رد عمل چھوڑتا ہے تو اس کا استعمال ترک کردیں اور اگر آپ اسے قبض وغیرہ کے لیے استعمال کر رہے ہیں تو ایک ہفتے سے زیادہ استعمال نہ کریں اور ایک ہفتے کے بعد ایک ہفتے کا وقفہ دیکر دوبارہ استعمال کریں۔
ایلو ویرا کا پودا مختلف ایلوپیتھی ادویات کے اوپر اثر انداز ہو سکتا ہے خاص طور پر کڈنی کو بہتر بنانے والی ادویات کے اثر کو کم کرتا ہے اس لیے اگر آپ کسی بھی قسم کی ڈاکٹری میڈیسن استعمال کر رہے ہیں اور اُس کے ساتھ ایلوویرا کو کھانا چاہتے ہیں تو اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کیے بغیر مت کھائیں۔

بارش کے بعد ہوا ميں پانی کے تیرتے ہوئے ننھے ننھے کروی (گیند نما Spherical) قطروں پر جب سورج کی سفید روشنی پڑتی ہے تو سات رنگوں میں بکھر جاتی ہے جسے دھنک یا۔۔۔ مزید پڑھیں

آج ہم وٹامن ای کے ان حیران کن فوائد اوراستعمالات کے بارے میں بتائیں گے، جن کے بارے میں آپ نے کبھی بھی نہیں سناہوگا۔وٹامن ای کومختلف اشیاے کے ساتھ۔۔۔ مزید پڑھیں

ملک و ملت کا نام روشن کرنے والوں کا نام روشن رکھنا زندہ قوموں کا شیوہ رہا ہے۔ ہم بحیثیتِ پاکستانی اپنے فرزندِ ملت ڈاکٹر عبدالسلام کی کاوشوں کو سراہتے ہیں۔۔۔ مزید پڑھیں

کچھ کھانے ایسے ہیں جنہیں دوسرے کھانوں میں شامل کر کے کھایا جائے تو وہ ہمارے نظام انہظام پر اچھے اثرات مرتب نہیں کرتے اور بعض دفعہ ہمیں بیمار بھی کر دیتے ہیں۔۔۔ مزید پڑھیں

دنیا میں چند عمارات ایسی بھی ہیں جن کی تعمیر پر ایک شاہانہ بجٹ خرچ کیا گیا ہے جس کے ساتھ ہی انہیں دنیا کی مہنگی ترین عمارات ہونے کا اعزاز حاصل ہوچکا ہے۔۔۔ مزید پڑھیں

ایک دن نائی نے بادشاہ سے عرض کیا،حضور آپ وزیر کی جگہ مجھے وزیر کیوں نہیں بنا دیتے۔ بادشاہ نے مسکرا کر حجام کی طرف دیکھا اور اس سے کہا،ٹھیک ہے لیکن پہلے تم۔۔۔ مزید پڑھیں

یہ تاریخ کا پہلا واقعہ تھا کہ کسی ہندو کی چتا کو آگ نہ لگنے کی وجہ سے شمشان گھاٹ میں ہی دفنا دیا گیا ۔ایک ہندو احترام قران میں اس دنیا کی آگ سے محفوظ رہا ہم اس کتاب پر۔۔۔ مزید پڑھیں

یہ ایک مفلس غریب الوطن کے عزم و ہمت کی انوکھی داستان ہے جو ثابت کرتی ہے کہ آپ ڈٹے رہیں، محنت کرتے رہیں تو بالآخر کامیابی آپ کے قدم چومتی ہے۔۔۔ مزید پڑھیں

برہنہ حالت میں کبھی خود کو آئینے میں مت دیکھیں کیونکہ اس طرح جن آپ پر عاشق ہو سکتے ہیں اور آپ کے ساتھ تعلق کی کوشش کر سکتے ہیں۔ ایسی صورت میں اور کوئی بھی ۔۔۔ مزید پڑھیں

جوزف سوان اور تھامس ایڈیسن نے 1870 کی دہائی میں بجلی کا بلب بنایا۔ اس سے چند برس بعد ایڈیسن نے بجلی بنانے کے سٹیشن نیویارک میں پرل سٹریٹ اور لندن میں ۔۔۔ مزید پڑھیں

انسان نے سونا 8,000 سال قبل دریافت کر لیا تھا۔ 750 سال قبل از مسیح تک یعنی سونے کی دریافت کے سوا پانچ ہزار سال بعد تک انسان صرف سات دھاتوں سے واقف تھا ۔۔۔ مزید پڑھیں

سورہ کہف کی تلاوت فتنے دجال سے نجات کا باعث ہے ۔ خروج دجال قیامت کی بڑی نشانیوں میں سے ایک ہے اور فتنہ دجال زمانے کے شروفتن میں سب سے بڑا فتنہ ہے مکہ مکرمہ۔۔۔ مزید پڑھیں